ادب

بعض الفاظ کی دلچسپ اصل اور اشتقاق

لفظوں کی اصل اور ان کی تاریخ کا کھوج ایک دل چسپ علمی مشغلہ ہے۔ تاریخی لسانیات (historic linguistics) اور علم ِ اشتقاقیات (etymology) وہ علوم ہیں جن کی مدد سے لفظوں کی تایاریخ ، الم اواا ں المن کی اورت دل الو ںلم کی اورت ن الوت ترد آئیے …

Read More »

انگریزی زبان کے معروف پاکستانی ناول نگار جلال الدین

پاکستان کی کئی ایسی شخصیات ہیں ، جو اپنے ملک میں تو گمنام رہیں ، لیکن دنیا بھر میں ان کو شہرت نصیب ہوئی۔ ادب کی دنیا میں اس کیایک مثال, پاکستانی ناول نگار”جلال دین ” کی ہے, جنہیں پاکستان میں کوئی نہیں جانتا, کسی منظرنامے یا ادبی میلے میں …

Read More »

ہماری روایتی تحقیق کا آخری ستون ڈاکٹر مظہر محمود شیرانی

اردو زبان میں بالخصوص ادبی تحقیق نے, اگرچہ سید اور ان کے ایک دو معاصرین سبب صدی کے آواخر میں, کی توجہ حاصل واقعتا بیسویں پایا طور پر تیسری دہائی کے آغاز میں, جب اردو آغاز و ارتقا پر مطالعات تحقیقات کا سلسلہ شروع روایت کو ایک جامعیت معیار جن …

Read More »

دکنی اردو اور قلی قطب شاہ کی زبان

اردو ادب (دہلی) کے شمارہ جنوری۔ مارچ ۲۰۲۰ ء میں شمس الرحمٰن فاروقی کا ایک مضمون شائع ۔اس کا عنوان ہی چونکا دینے والا ہے اااا الا ہے ہے وت رد موت رد موت رد موت رد اس مضمون میں فاروقی صاحب کہتے ہیں کہ نکات الشعرا میں میر تقی …

Read More »

اُردو زبان کا خون

فاروق احمد یہ ہماری پیدائش سے کچھ ہی عرصےپہلے کی بات ہے جب مدرسہ کو بنا دیا گیا تھا لیکن اس وقت تک انگریزی زبان اصطلاحات دوران تعلیم استعمال نہیں ہوتی تھیں صرف انگریزی کے چند الفاظ ہی مستعمل تھے, مثلا ماسٹر, فیس, پاس وغیرہ وغیرہ. “گنتی” ابھی “” میں …

Read More »

قد آور ڈرامہ نگار ” خواجہ معین الدین ”

خواجہ معین الدین اُردو ڈرامے یا تمثیل کا ممتاز اور نمایاں نام ہے۔ ماچ 1924 ء کو حیدرآباد دکن کے متموّل گھرانے میں پیدا ہوئے۔ اس دور میں حیدرآباد علم و اَدب کابڑا مرکز شمار کیا جاتا تھا۔ کہا جاتا ہے اس دور میں برصغیر کے اہلِ علم ، اہلِ …

Read More »

مشتاق احمد یوسفی ، ایک عہد کی پہچان

ڈاکٹر فاطمہ حسن یادوں کی تند و تیز ہوا میں اڑتے اوراق کو پکڑنا ، سمیٹنا اور یکجا کر کے لکھنا بھی مشتاق احمد ییب۔ا جیسی شخصیت پر ل ویسے بھی قلم اور آزمائش لازم و ملزوم ہے۔ اس آزمائش کا صحیح اندازہ اچھی کتاب اور شاہکار تخلیق کرنے والے …

Read More »

اب پتہ نہیں کون فوت ہوگا؟ اشفاق احمد

٭… ایک فوتگی کے موقع پر میں نیم غنودگی میں کچھ سویا ہوا تھا اور کچھ جاگا ہوا نیم دراز سا پڑا تھا۔ وہاں بچے بھی تھے جو آپس میں باتیں کررہے تھے۔ ان میں سے ایک بچے کی بات نے مجھے چونکا دیا وہ کہہ فوت ہوجائے تو بڑا …

Read More »

پروفیسر جاذب قریشی کا ادبی انہماک

شام تو آئے گی تعاقب میں چاہے سورج کا گھر بنائے کوئی پروفیسر جاذب قریشی کے اس شعر میں اگرچہ ‘سورج استعارہ دانش اور ہنر وری کے اجالے اور’ شام ‘کا استعارہ منافقت کے اندھیرے سے ہے لیکن ایک اور رخ اور شام کا تعاقب کرتی ہوئی موت کا تلازمہ …

Read More »

چراغوں کے بجھانے کو ہوا بے اختیار آئی

… جاذب قریشی … چراغوں کے بجھانے کو ہوا بے اختیار آئی گلابوں کی مہک بکھری تو آواز شرار آئی بگولوں نے سفر میں آندھیوں کا آسماں دیکھا مگر اک فاختہ اپنے شجر تک بے غبار آئی جسے تو نے اُجالا جان کر چہرے پہ لکھا تھا وہی شہرت تری …

Read More »