فرانس میں پیٹرول کی قلت : ٹرانسپورٹرز نے ہڑتال کا اعلان کردیا


پیرس : فرانس میں پیٹرولیم مصنوعات کی عدم فراہمی کیخلاف ٹرانسپورٹرز سراپا احتجاج ہیں، ٹرانسپورٹ یونین نے ملک بھر میں پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کردیا۔

فرانس میں آئل ڈپوز کی ہڑتال کے باعث تین ہزار کے قریب پٹرول پمپ بند پڑے ہیں، ہڑتال کا یہ سلسلہ گزشتہ تین ہپفتوں سے جاری ہے اور نوبت یہاں تک آچکی ہے کہ سال 2010کے بعد پہلی مرتبہ فرانس کو اپنے تیل کے ذخائر استعمال کرنا پڑ رہے ہیں۔

گاڑیوں کے مالکان کو پٹرول کے حصول میں شدید مشکلات درپیش ہیں، ہڑتال کی وجہ سے ملکی معشیت کے تمام شعبے بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فرانس کے پیٹرول پمپوں کو تیل کی فراہمی کم ہو کر صرف 30 فیصد رہ گئی ہے۔ مسئلہ حل کرنے کے لیے ٹرانسپورٹ یونینیوں نے حکومت سے مذاکرات کا آغاز کیا تھا لیکن بات چیت تعطل کا شکار ہوگئی۔

فرانسیسی حکومت کے ساتھ تیل کی کمی کے حوالے سے ہونے والے مذاکرات میں تعطل کے بعد ٹرانسپورٹ یونین رہنماؤں نے آج سے ملک گیر ہڑتال کا اعلان کردیا ہے۔

حکومت کے قوانین کے نفاذ کیخلاف پورے ملک میں یونینوں کے زیر اہتمام ریفائنریوں کے باہر احتجاجی مظاہرے کیے جارہے ہیں۔
ریفائنریوں کے ہزاروں ملازمین نے تنخواہوں میں اضافے کیلئے احتجاجی مظاہرہ کیا۔

ذرائع کےمطابق اس تمام صورتحال میں پیہدا ہونے والی افراتفری کے باعث تیل کی زیادہ خریداری کی وجہ سے بھی پورے ملک میں پٹرول کی قلت پیدا ہوگئی ہے۔


About admin

Check Also

ٹی ڈی اے کے سابق سربراہ ایس ایم منیر انتقال کرگئے

کراچی: شہر قائد کی معروف کاروباری شخصیت ایس ایم منیر مختصر علالت کے بعد خالق …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *