پیپلز بس سروس کے کرائے میں اچانک اضافہ کیوں؟ وجہ سامنے آگئی


کراچی : سندھ حکومت کے تحت چلنے والی پیپلز بس سروس (پی بی ایس) کی انتظامیہ نے بس کے کرائے میں اچانک سو فیصد اضافہ کردیا۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ فیصلہ انٹرسٹی روٹس پر کرایوں پر نظرثانی کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا جس میں بس سروس کے نگراں ادارے نیشنل ریڈیو اینڈ ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن (این آر ٹی سی) سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی اور تھرڈ پارٹی کے انجینئرز کے نمائندگان نے شرکت کی۔

اے آر وائی نیوز کراچی کی نمائندہ عشرت خان کی رپورٹ کے مطابق گلشن حدید سے ٹاور تک نئے توسیع شدہ پیپلز بس سروس کے روٹ کا زیادہ سے زیادہ کرایہ 50 روپے سے بڑھا کر 100 روپے کر دیا گیا ہے کیونکہ فاصلہ اب 58 کلومیٹر ہوگیا ہے۔

نمائندہ اے آر وائی کے مطابق شہر میں ایک سے دس نمبر روٹ تک کی بسیں سڑکوں پر رواں دواں ہیں جس میں سے صرف ایک آر نائن نمبر کی بس کے کرائے بڑھائے ہیں۔

یہ راستہ گلشن حدید میں اللہ والی چورنگی سے شروع ہو کر اسٹیل ٹاؤن، پورٹ قاسم چورنگی، منزل پیٹرول پمپ، قائد آباد، ملیر، ملیر ہالٹ، کالونی گیٹ، ناتھا خان پل، ڈرگ روڈ اسٹیشن، پی اے ایف بیس فیصل، لال کوٹھی، کارساز، نرسری، ایف ٹی سی، میٹروپول، کراچی پریس کلب، آرٹس کونسل کراچی، پاکستان، آئی آئی چندریگر روڈ اور سٹی اسٹیشن سے ہوتا ہوا ٹاور پر ختم ہوتا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ راستہ پہلے گلشن حدید سے صرف ملیر کینٹ تک تھا، آپریٹر نے روٹ کی توسیع کے بعد three روز قبل اس روٹ پر بس کا کرایہ سو روپے وصول کرنا شروع کر دیا ہے۔


About admin

Check Also

ڈالر کی اونچی اڑان جاری، سونا بھی مزید مہنگا

کراچی: تمام ترحکومتی اقدامات کے باوجود ڈالر کی اونچی اڑان جاری ہے۔ وفاقی حکومت کی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *