بے موسم بارشوں نے بھارت کی زراعت تباہ کردی


لکھنؤ : بھارت میں مون سون سیزن کے بعد ہونے والی بارشیں زحمت بن گئیں، فصلیں تباہ ہونے کے بعد کسان مالی مشکلات کا شکار ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست اترپردیش کے کئی علاقوں میں بے موسم بارشوں نے فصلوں کو تباہ کرکے کسانوں کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ہے۔

پہلے تو مون سون کے دوران بارشیں بہت کم ہوئیں اور اب ستمبر اور اکتوبر کے مہینوں میں ہونے والی بے موسم بارشیں فصلوں پر تباہی بن کر ٹوٹ رہی ہیں۔

Unseasonal Rainfall Causes Severe Crop Damage Across States | NewsClick

خریف کی فصل 50 سے 100 فیصد تک تباہ ہوگئی، جس کے بعد کسان معاشی طور پر بدحال ہوگئے، شدید بارشوں کی وجہ سے لاکھوں ہیکٹر زرعی اراضی ڈوب گئی ہے جس سے دھان، مکئی اور آلو کی فصلوں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اتر پردیش کے 75 اضلاع میں سے تقریباً 67اضلاع ایسے ہیں جہاں بے موسم بارش نے زرعی اراضی پر کھڑی فصلوں کو تباہ و برباد کردیا۔

Incessant Post-Monsoon Rains Damage Crops in Maharashtra; Cause Losses Over ₹5,000 Crores | The Weather Channel

کسانوں کا کہنا ہے کہ آج کل ان کے لیے مالی حالات انتہائی قابل رحم اور کورونا کی وبا سے بھی زیادہ بدتر ہیں، کھیتوں میں پانی جمع ہونے سے دھان کی فصل کو 50 فیصد سے 100 فیصد تک کا نقصان ہوا ہے۔

محکمہ موسمیات کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق اتر پردیش میں یکم جون سے 30 ستمبر تک مون سون کے دوران 30 فیصد سے کم بارش ریکارڈ کی گئی۔

Unseasonal Rain Damages Crops In Various Parts Of North India - CharteredWorld

اور اب جبکہ مون سون رخصت ہو چکا ہے تو کئی اضلاع میں موسلادھار بارش ہو رہی ہیں۔ اعداد و شمار کے مطابق ریاست میں 683 فیصد سے زائد بارش ہوئی ہے۔


About admin

Check Also

کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کروڑوں ڈالر کا اضافہ

کراچی : پاکستان کے کرنٹ اکاؤنٹ خسارے بیس کروڑ چالیس لاکھ ڈالر اضافے کے ساتھ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *