دنیا بھر کو قرض دینے والا ’’امریکا‘‘ خود قرضوں میں جکڑ گیا


دنیا بھر کو قرض دینے والا ملک امریکا خود قرضوں میں جکڑ گیا ہے اور اس کا قومی قرضہ تاریخ میں پہلی بار 31 ٹریلین ڈالر سے تجاوز کر گیا ہے۔

امریکی ٹی وی نیٹ ورک کی ویب سائٹ رپورٹ کے مطابق شرح سود اور افراط زر میں بلند ترین اضافہ اور بڑھتی ہوئی اقتصادی عدم استحکام کے ساتھ ہی امریکا کا قومی قر‍ضہ پہلی بار کے لیے 31 ٹریلین ڈالر سے تجاوز کر گیا ہے۔

اس حوالے سے امریکی محکمہ خزانہ کا کہنا ہے کہ گزشتہ پیر تک امریکا کا کُل قومی قرضہ تقریباً 31.1 ٹریلین ڈالر تک پہنچ گیا ہے، اس کی بڑی وجہ کورونا وبا بھی قرار دی جا رہی ہے، کورونا وائرس جس نے دنیا بھر کی معیشت کو درہم برہم کردیا اس نے امریکی حکومت کو ملکی معیشت میں قرض لینے پر مجبور کیا۔

رپورٹ کے مطابق 2020 کے آغاز سے اب تک اس ملک کے قرضوں میں تقریباً eight ٹریلین ڈالر کا اضافہ ہوا ہے جس میں ایک ٹریلین ڈالر کا اضافہ صرف حالیہ eight مہینوں کے دوران ہوا ہے۔

امریکی محکمہ خزانہ کی رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ گزشتہ دہائی میں امریکی قرض لینے کی سطح میں اضافہ ہوا ہے۔ 20 جنوری 2009 کو جب براک اوباما نے اقتدار سنبھالا تو امریکا کا قرضہ 10.6 ٹریلین ڈالر تھا، جب ڈونلڈ ٹرمپ 20 جنوری 2017 کو اقتدار میں آئے تو یہ تعداد 19.9 ٹریلین ڈالر تک پہنچ گئی اور جب موجودہ صدر بائیڈن نے 20 جنوری 2021 کو اقتدار سنبھالا تو قرض کا حجم بڑھ کر 27.eight ٹریلین ڈالر ہوچکا تھا۔

About admin

Check Also

ٹی ڈی اے کے سابق سربراہ ایس ایم منیر انتقال کرگئے

کراچی: شہر قائد کی معروف کاروباری شخصیت ایس ایم منیر مختصر علالت کے بعد خالق …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *