بھارتی کرنسی کو 22 سال بعد بڑا دھچکا : ڈالر نے پچھاڑ دیا


بھارتی کرنسی فی الوقت مسلسل گراوٹ کا شکار ہے اور آج ایک ڈالر 81.30 بھارتی روپے کے برابر ہوکر 22 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

انڈین روپے کی ڈالر کے مقابلے میں قدر میں تاریخی کمی آئی ہے۔ اسی طرح پاؤنڈز نے بھی 114.50 روپے پر پہنچ کر بھارتی روپے کو ڈھیرکردیا۔

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ روپے کی قدر میں ریکارڈ کمی سے خام تیل اور دیگر اشیاء کی درآمدات مہنگی ہو جائیں گی، جس کے سبب مہنگائی میں مزید اضافہ ہوگا۔ مہنگائی پہلے ہی 6 فیصد سے اوپر ہے۔ ایسے میں آنے والے دنوں میں عام لوگوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے۔

امریکی مرکزی بینک فیڈرل ریزرو کی جانب سے شرح سود میں بار بار اضافے کی وجہ سے ہندوستانی روپے پر دباؤ بڑھ رہا ہے، تجارتی خسارہ بڑھنے اور بیرونی کرنسی کے اخراج کی وجہ سے روپیہ کے مزید ٹوٹنے کی توقع ہے۔

آر بی آئی کی مانیٹری پالیسی کمیٹی (ایم پی سی) اس ہفتے کے آخر میں دو ماہی مانیٹری پالیسی کا اعلان کرے گی۔ ایسی صورت حال میں افراط زر کے دباؤ کو کم کرنے کے لیے وہ ریپو ریٹ میں 0.50 فیصد اضافے کا اعلان کرسکتا ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق پیر کو ڈالر تقریباً 81.30 انڈین روپے تک پہنچ گیا جبکہ اس سے قبل یہ 80.9900 انڈین روپے پر تھا۔

ٹریڈرز کے مطابق جمعے کو ایک ڈالر کے مقابلے میں انڈین روپیہ 81.2250 کی ریکارڈ کم ترین سطح پر پہنچ گیا تھا، جس کی وجہ سے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) ڈالر فروخت کرنے پر مجبور ہوگیا تھا۔ آر بی آئی کی مداخلت کی وجہ سے روپے کی قدر میں کچھ بہتری دیکھنے میں آئی تھی۔


About admin

Check Also

ٹی ڈی اے کے سابق سربراہ ایس ایم منیر انتقال کرگئے

کراچی: شہر قائد کی معروف کاروباری شخصیت ایس ایم منیر مختصر علالت کے بعد خالق …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *