قرضہ ملنے کے باوجود ڈالر کی اڑان نہ رک سکی، روپے کی قدر مزید کم


ملک بھر میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قیمت میں ایک مرتبہ پھر اضافہ ہونے لگا ہے، آج پھر انٹر بینک میں ڈالر کی قیمت میں دو روپے eight پیسے کا اضافہ ہوا ہے۔

جس کے بعد انٹر بینک مارکیٹ میں امریکی کرنسی 234 روپے پر ٹریڈ کررہی ہے۔ اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت فروخت 240 روپے سے بھی تجاوز کرگئی۔

تفصیلات کے مطابق آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کے بعد بھی ڈالر کی قدر کم نہ ہوسکی، بدھ کو بھی ڈالرکی پیش قدمی جاری ہے۔ بدھ کو انٹربینک میں ڈالر 2 روپے eight پیسے مہنگا ہوکر 234 روپے کا ہوگیا۔

اس حوالے سے مقامی کرنسی ڈیلرز کا کہنا ہے کہ سیلاب کے بعد درآمدی ضروریات کیلٸے ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا ہے اور آئی ایم ایف کی ایکسچینج ریٹ کو فری فلوٹ رکھنے کی شرط نے بھی صورتحال مزید دشوار کردی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان کو1 ارب 16 کروڑ ڈالر قرض مل گیا، جس کے بعد یہ امکان ظاہر کیا جارہا تھا کہ اس سے روپے کی گرتی قدر کو سہارا ملے گا لیکن ایسا نہ ہوسکا اور ڈالر کو لگام نہ دی جاسکی۔

گذشتہ چند روز سے ملک کی کرنسی مارکیٹوں میں ڈالر سمیت دیگرغیرملکی کرنسیوں کے مقابلے میں روپیہ بے قدری کا شکار رہا۔

کرنسی ڈیلرز کا کہنا تھا کہ ڈالر کی طلب میں مسلسل اضافہ اس کی قدر میں اضافے کی سب سے بڑی وجہ ہے۔ ڈالر کی طلب کے مقابلے میں فراہمی آدھی بھی نہ ہونے کے باعث ڈالر مسلسل مہنگا ہورہا ہے۔


About admin

Check Also

تمام اسمارٹ فونز کے لیے ایک ہی چارجر، یورپی یونین کا بڑا فیصلہ

یورپی یونین نے اسمارٹ فون کے صارفین کی بڑی مشکل حل کردی، اب تمام موبائل …

Leave a Reply

Your email address will not be published.