کمرشل بینکوں سے ڈالر نہ ملنے کے سبب امپورٹر رل گئے


کراچی: امپورٹرز ایل سی کلیئر کرانے کے لیے بینکوں کے چکر لگانے پر مجبور ہوگئے، بینکوں نے آج 232 روپے فی ڈالر کے حساب سے کچھ ایل سی کلئیر کرائیں۔

تفصیلات کے مطابق کمرشل بینکوں سے ڈالر نہ ملنے کے سبب امپورٹر رل گئے اور امپورٹرز ایل سی کلیئر کرانے کے لیےبینکوں کے چکر لگانے پر مجبور ہیں۔

مختلف کمرشل بینکوں کے پاس ڈالر کے ذخائر نہ ہونے کے برابر رہ گئے ، بینکوں کی جانب سے آج 232 روپے فی ڈالر کے حساب سے کچھ ایل سی کلئیر کرائی گئیں۔

مختلف کمرشل بینکوں نے ڈالر نہ ہونے کے سبب امپورٹرز سے معذرت کر لی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ کمرشل بینکوں کی جانب سے اسٹیٹ بینک کو 2.8ارب ڈالر کی ڈیمانڈ بھیجی گئی ہے۔

امپورٹرز نے کہا کہ ایل سی کلیئر نہ ہونے کے سبب ہمیں شدید مشکلات کا سامنا ہے ، بروقت ایل سی نہ کھلیں تو ایکسپورٹ کے لیے خام مال کی کمی کا سامنا ہوسکتا ہے۔

ایکسپورٹرز کا کہنا تھا کہ خام مال نہ ملنے کے سبب ایکسپورٹ ارڈرز متاثر ہونے کا اندیشہ ہے۔

اس حوالے سے تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل نے کہا کہ بنک لیٹر آف کریڈٹ کے لئے 242 روپے فی ڈالر ڈیمانڈ کر رہے ہیں، مطلب دستیاب ڈالرز انتہائی محدود،خام مال نہیں آئے گا تو ایکسپورٹ بھی مزید تباہ۔

شہباز گل کا کہنا تھا کہ مہنگائی45فیصد،ڈیفالٹ کے خطرے میں ملک دنیامیں چوتھے نمبر پر آگیا لیکن کرتا دھرتا 40 ،40 کروڑ حرام کے مال سےایم پی ایزخریدنےکی کوشش میں ہے۔

About admin

Check Also

سونے کی قیمت میں یکدم ہزاروں روپے اضافہ

کراچی: سونے کی فی تولہ قیمت میں آج بڑا اضافہ دیکھا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹ …

Leave a Reply

Your email address will not be published.