اسٹیٹ بینک کی جانب سے مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود میں اضافہ

کراچی: اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے مانیٹری پالیسی کا اعلان کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق اسٹیٹ بینک نے شرح سود میں ایک فیصد کا اضافہ کر دیا، جس کے بعد شرح سود 8.75 فی صد سے بڑھ کر 9.75 فی صد ہو گیا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق شرح سود بڑھانے کا فیصلہ مہنگائی کنٹرول کرنے کے لیے کیا گیا ہے، اگلی مانیٹری پالیسی کمیٹی کا اجلاس 24 جنوری کو ہوگا، یاد رہے کہ 19 نومبر کو اسٹیٹ بینک نے بنیادی شرح سود ڈیڑھ فی صد اضافے سے Eight اعشاریہ سات پانچ فی صد کی تھی۔

زری پالیسی کمیٹی (ایم پی سی) نے اپنے آج کے اجلاس میں پالیسی ریٹ کو 100 بیسس پوائنٹس بڑھا کر 9.75 فی صد کرنے کا فیصلہ کیا، اس فیصلے کا مقصد مہنگائی کے دباؤ سے نمٹنا اور اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ نمو پائیدار رہے۔

زری پالیسی رپورٹ کے مطابق 19 نومبر 2021 کو پچھلے اجلاس کے بعد سے سرگرمی کے اظہاریے مستحکم رہے ہیں، جب کہ مہنگائی اور تجارتی خسارے میں اضافہ ہوا ہے، جس کا سبب بلند عالمی قیمتیں اور ملکی معاشی نمو ہے۔

نومبر میں عمومی مہنگائی بڑھ کر 11.5 فیصد (سال بسال) ہوگئی، شہری اور دیہی علاقوں میں بنیادی مہنگائی بھی بڑھ کر بالترتیب 7.6 فیصد اور 8.2 فیصد ہوگئی، جس سے ملکی طلب کی نمو کی عکاسی ہوتی ہے۔

بیرونی شعبے میں ریکارڈ برآمدات کے باوجود اجناس کی بلند عالمی قیمتوں نے درآمدی بل میں خاصا اضافہ کرنے میں کردار ادا کیا، نتیجے کے طور پر پی بی ایس اعداد و شمار کے مطابق نومبر میں تجارتی خسارہ بڑھ کر 5 ارب ڈالر ہوگیا۔

The put up اسٹیٹ بینک کی جانب سے مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود میں اضافہ appeared first on ARYNews.television | Urdu – Har Lamha Bakhabar.

About admin

Check Also

برانچ لیس بینکنگ : پاکستان میں آسان موبائل اکاؤنٹ اسکیم کا آغاز

آپ اپنے گھر میں بیٹھے کس طرح موبائل فون پر اپنا بینک اکاؤنٹ کھول سکتے …

Leave a Reply

Your email address will not be published.