آئی ایم ایف مذاکرات ، نئے ٹیکسز پر ایف پی سی سی آئی کا شوکت ترین کوخط

عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف سے مذاکرات اور نئے کے معاملے پر فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) نے وزیرخزانہ شوکت ترین کو لکھا سی سی آئی نے 2500 ارب روپے قرض کا انکشاف کیا ہے.

خط میں کہا گیا ہے کہ ٹیکس اضافے کو نامنظور کرتے ہیں ، 2500 ارب مہنگے قرض کی انکوائری کیجیے۔

ایف پی سی سی آئی نے الزام عائد کرتے ہوئے خط میں کہا ہے کہ سابق وفاقی قرض کئی سال مہضنگی شرح پر لقائا د قرض بہر د برد ساب بہر د

خط میں کہا گیا ہے کہ سب کو اچھی طرح علم تھا کہ شرح سود کم ہوگی ، کے نتیجے میں بینکوں کا منافع دگنا ہوگا۔

ایف پی سی سی آئی کے خط میں کہا گیا ہے کہ سابق وزیر خزانہ نے آئی ایف کی ناک کے نیچے نقصان دہ فیصلے کیے۔

ایف پی سی سی آئی نے ٹیکس بڑھانے کے بجائے مہنگے قرض پر انکوائری کا مطالبہ کردیا۔

خط میں کہا گیا ہے کہ آئی ایم ایف پروگرام شروعات میں مہنگائی کی شرح eight سے 9 فیصد پر تھی ، اس موقع پر شرح سود غیر.5 .منطقی سود غیر.5 .منطقی

کردی گئی ، فیصلے کے نتیجے میں 1952 کے بعد پہلی بار منفی شرح نمو ریکارڈ ہوئی۔

ایف پی سی سی آئی کا اپنے خط میں کہنا ہے کہ آئی ایف مذاکرات کو شفاف بنایا جائے اور کاروباری ببجم لی کےا نم بم لوو ا نم ئبدے کوو



About admin

Check Also

عمران خان نے جہاں ہاتھ ڈالا وہاں تبدیلی نہیں تباہی آئی، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *