بلوچستان سیاسی بحران ، آج ہلچل قدرے کم رہی

بلوچستان میں پچھلے ایک ماہ سے جاری سیاسی بحران میں آج ہلچل قدرے کم رہی۔

ناراض اراکین کی رات گئے پھر بیٹھک ہوئی تو اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں اجلاس پیر کی صبح ہاوگا ، وزیم پ

بلوچستان میں جاری سیاسی بحران کا اونٹ کسی کروٹ نہیں بیٹھ رہا ہے۔

پچھلے تین ہفتوں سے لفظوں کی گولہ باری کے باوجود کوئی نتیجہ سامنے نہیں آیا ہے۔

بلوچستان کے سیاسی بحران میں three فریقین ہیں, ایک صوبے کی اپوزیشن جماعتیں ہیں, آزاد رکن نواب اسلم رئیسانی کو شامل کرکے اپوزیشن اراکین کی تعداد 23 ہے.

بلوچستان عوامی پارٹی کے ناراض اور بی این پی عوامی کے اراکین کی تعداد 16 ہے جبکہ وزیار ا احم یاااا ام یامال کے توت ب.

ایک رکن اسمبلی نواب ثنا اللّٰہ زہری کا جھکاؤ کس طرف ہے یہ کہا نہیں جاسکتا ہے۔

صوبے کی اپوزیشن اور بی اے کے ملکر جام کمال کے خلاف تحریک عدم کے بجائے گورنر بلوچاسان سے رہے یٰاوحم ےوحم یوحم یوحم یوحم یوحم یوحم یوحم وحم م تود

بلوچستان اسمبلی کا شیڈول اجلاس 12 اکتوبر سے متوقع ہے ، لیکن گورنر بلوچستان کی جانب سے اھیبھی ھیتک وہ ن لاس بتک وہ نجلاس بتک وہ نجلاا ب

بی اے پی کے ناراض ارکان کا اجلاس اسپیکر عبدا بزنجو بزنجو رہائش گاہ پر اجلاس پر جس میںوم پا کے اکے ن ن بدا بز ا ن نرض ب عراکے ن نرض بی عراکے ن نرضم بی اکے ن نرض ب

اس صورتحال میں اپوزیشن لیڈر ملک سکندر ایڈوکیٹ نے اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کا اجلاس کل پیر صبی ہےارہ کر صبح گیارہ بجے کول بجے ول



About admin

Check Also

عمران خان نے جہاں ہاتھ ڈالا وہاں تبدیلی نہیں تباہی آئی، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *