پیپلز پارٹی نے سندھ کے مسائل حل کرنے کی ٹھان لی

سندھ میںآئندہ کے انتخابات کے لیے جماعتوں ایک بڑا اتحاد کے غیر محسوس طریقے سے کوشیش گئی ہیں اس ضمن سابق وزیر اعلی کا سلسلہ تیز کہا جا رہا ہے کہ کشمور, گھوٹکی, سکھر, بدین حیدرآباد میں سیاسی شخصیات سمیت افراد کو پارٹی میں کی کوششیں کی جا جو پی اضلاع کے با اثر افراد سے بھی رابطے کئے جائینگے۔ دوسری جانب پی ٹی ا ٓئی کو سندھ میں سیاسی طور پر مضبوط بنانے کے لیے صوبائی ضلعی سطح پر اہم تبدیلیا ں بھی تو

یہ بھی کہا جا رہا ہے پی کا غوث کو بنایا جائے گا ڈی اے کے بھی سیٹ لیے بھی. رکے منصوبے جلد مکمل کرنے کی ہدایت دے دی گئی ہے۔

دوسری جانب پی پی پی اس صورت حال سے باخبر ہے اور وہ کی اس حکمت عملی کا جواب دینے کے لیے تیار ہیں۔ پی پی پی گذشتہ تقریباـ چودہ برس سے سندھ پر بلا شرکت کر رہی ہے تاہم اسکی کارکردگی پر سیاسی اوا اک سیاسی اور اب بھحوجر بھر تپور بھحوجا

پی پی پی کی کارکردگی کے سے بھی کے سماعت کے دوران جو ریمارکس دئے اس ظاہر ہوتا ہے پی پی پی سندھ میں اچھی کے مطابق پی پی خراب باوجود الیکشن میں کامیابی حاصل کر ہے وجہ یہ کہ پی پی پی کی قیادت بھر کے تمام وڈیرے بااثر افراد پارٹی میں شامل پھر کر کے جاتے یہ افراد الیکشن میں اپنے زیر اثر افراد کے ووٹ پی پی پی کوک دےاتےانے میں تاہم ر د انے میں تہر مرد

وجہ چاہے کچھ بھی ہو تاہم سندھ کے بڑے اس رویے کے خلاف احتجاج ہو ہے اور اب جا ہے کہ وفاق اور میں حکومت کرنے حکوم

یہ حقیقت ہے کہ سندھ کو اور سراسر ہے, وفاق میں برسراقتدار پارٹی اس ہے کہ اصل کا معرکہ بنائے گا جبکہ سندھ پر کرنے والی جماعت یہ سمجھتی ہے کہ سندھ میں اس کا مدمقابل کوئی نہیں. اسی لیے سندھ میں دیگر صوبوں نسبت کم ہوئے تاہم اب پی پی پی نے پر توجہ دینے کے اقدمات کرلئے سید مراد علی صوبائی خصوصی کچہریاں بھر رہے ہیں جہاں عوام کی شکایت جا جانب مراد علی شاہ نے دماغی معالجے کیلئے ڈاؤیونیورسٹی ہسپتال اوجھا کیمپس مفت علاج فراہم کرنے کا کیاہے۔

یہ ایک بہت مہنگا علاج ہے شخص کے علاج پر 250000 روپے خرچ ہوتے ہیں اور ایک سال میں تقریبا علاج کیا جاتا ہے, لیے صوبائی حکومت اس کا اٹھائے کا اور مکمل پر مفت I وزیراعلی سندھ نے کہا کہ انہیں کہ دنیا بھر میں 400 سے زائد یونٹ نصب ہیں اور یہ سیکٹر میں ڈاؤ یونیورسٹی ہسپتال ہونے والا گاما ہے فخر کی بات. اس اپوزیشن اراکین ہماری حکومت پر تنقید کرتے رہیں ہیں سندھ کے لوگوں کی خدمت کریں کہا کہ یہ پیپلز پارٹی کی ہے کہ Me

انہوں نے کہا کہ مجھے اس کوئی کہ کیا پروپیگنڈہ کر رہے ہیں, ہم کے کی خدمت اور لوگوں کی زندگی بنانے پر یقین کے درمیان شکوے شکایتوں سلسلہ وزیر اطلاعات و محنت سندھ سعید اور جام نے میں کہا ہے کہ وقت پانی کے پر پاکستان رہا, سندھ. وجہ سے میں پانی کی قلت پیدا ہوئی ہے۔اگرپانی کی کمی کا سامنا ہے تو تحت جس طرح تقسیم کرنا ہے ا۔ طرح سے کریں رح سے کریں

اسمبلی کو ایکٹ کو اٹھا کر باہر پھینک دیا گیاہے اور ارسا وہ اس پر عمل نہیں کرے گی.سی سی آئی کوئی بھی حکومت صوبے کا حق نہیں جام خان شورو نے کہا کہ ارسا سال میں دو میٹنگ کرتا ہے ایک خریف اور دوسری ربیع حوالے سے کی جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے ساتھ پانی کی تقسیم ناانصافی باعث کاٹن اور چاول کی فصلیں ہاماری م

انہوں نے کہا کہ ہمیں اس وقت کے سے ملنا ہے لیکن ہمیں ربیع کی فصل کے لئے کی قلت. سامنا ہوگا ، کہ ہمارے ساتھ سراسر ناانصافی کے مترادف ہے۔ دوسری جانب سندھ حکومت نے وفاق سے پی ایم سی کو کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ ایم سی میڈیکل ً خ



About admin

Check Also

مہنگائی نے بے بس عوام کا جینا محال کردیا

مہنگائی کی شرح میں 12 اعشاریہ 66 فیصد اضافے کو منی بجٹ قرار دے کر …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *