سندھ میں 28 ہزار سے زائد کورونا ویکسین ضائع ہوئیں

سندھ بھر میں کورونا کی مختلف اقسام کی ویکسین ضائع ہونے کا انکشاف ہوا ہے, صوبہ بھر میں 28 ہزار 268 سے زائد ویکسین کےڈوزز ہوچکے ہیں جبکہ ڈائریکٹر ہیلتھ ڈاکٹر اکرم سلطان ویکسین کے ضائع ہونے سے ہیں.

کراچی میں ایک جانب کورونا وائرس کے مثبت آنے کی شرح, لوگوں کی سے ایس او پیز عملدرآمد نہیں کیا جارہا, میں محکمہ صحت سندھ تک کورونا کی مختلف اقسام کی 28 ہزار 2 .68 سے زائد کے ڈوزز ضائع کا انکشاف بھی سامنے آیا ہے.

محکمہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق سب سے زیادہ اسٹرا زینیکا کے eight ہزار 653 ڈوز ضائع ہوچکے ہیں, نمبر پر سائینو ویک کے eight ہزار 632 ڈوز, سائینو فارم کے 5 ہزار 892 ڈوزز, پاک ویک کے three ہزار 984 ڈوز, کین سائینو ویکسین 1 ہزار 95 ڈوزز ضائع ہوچکے ہیں۔

سب سے کم فائزر ویکسین کے three اور موڈرنا ویکسین کے اب تک 9 ڈوزز ضائع ضائع ہوئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق 80 فیصد سے زائد ویکسین کا ضائع میں ہوا ہے جس کی بنیادی ذمہ داری ڈائریکٹر ہیلتھ پر عائد ہوتی, تمام ضلعی صحت کے افسران (ڈی ایچ اوز) ڈائریکٹر ہیلتھ کے ماتحت ہیں جو ویکسین کی ترسیل کے ذمہ دار ہیں.

ڈائریکٹر ہیلتھ کراچی ڈاکٹراکرم سلطان نے جیو نیوز سے اس معاملے پر لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔

ترجمان محکمہ صحت کے مطابق سندھ میں اب تک 52 لاکھ 13 ہزار 95 ویکسین کی خوراکیں لگائیں گئی ہیں, ذرائع کے مطابق کے ضائع ہونے کی حرارت کا مناسب ہونے, متاثرہ شخص کا ویکسین لگواتے وقت مراکز ویکسین فروخت کرنا شامل ہوسکتا ہے.



About admin

Check Also

عمران خان نے جہاں ہاتھ ڈالا وہاں تبدیلی نہیں تباہی آئی، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *