مقبوضہ کشمیر میں بچوں کی صورتحال پر یورپی یونین کی گہری نظر

مقبوضہ کشمیر میں بچوں کی صورتحال پر اقوام متحدہ کے جنرل انتونیو گوتریس کے بیان پر یورپین یونین ردعمل سامنے آگیا میں یورپین یونین نے ہے کہ یہ ایک مسئلے پر گہری نظر ہے.

یورپین یونین کی جانب سے یہ رد عمل ، جنگ اور جیو کے ایک سوال پر سامنے آیا۔ جس میں یورپین یونین کے لیڈ ترجمان پیٹر اسٹانو سے پوچھا ان کا اقوام متحدہ کی سلامتی میں سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس کی پیش کردہ ‘چلڈرن اینڈ آرمڈ کنفلیکٹ’ رپورٹ پر کیا رد عمل ہے?

اس میں سیکریٹری جنرل نے بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بچوں کے پیلٹ گن کا استعمال اور تشدد کو۔

سوال کو جاری رکھتے ہوئے مزید پوچھا گیا کہ کسی بھی طریقے دیکھا جائے تو بھارت کا یہ عمل بچوں حقوق تحفظ کے بین الاقوامی و یورپین قوانین کی خلاف ورزی ہے. اس پر یورپین یونین کا کیا رد عمل ہے ؟۔

اس پر یورپین یونین کے خارجہ امور کے ادارے کے نے کہا کہ یہ بات بہت اہم ہے متحدہ کی جانب سےم سلاماانب سےم سلامات ن سم سلاماتی پیش سن سردہ مل

ترجمان نے اپنی گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ جہاں یورپین یونین کا تعلق ہے ، آپ ان بنیادی ا م اا جن ب م لرحا جن کہ ب م یہ ایک اہم مسئلہ ہے ، ہماری اس مسئلے پر گہری نظر اور پوری دنیا پر توجہ ہے۔

جمعرات کی مڈ ڈے بریفنگ میں پوچھے گئے سوال کے جواب نے مزید کہا کہ جہاں بھی پر تشویش مےسائال پید وٹھم ک م ال وام لد دم انہیں متر تت د

انھوں نے مزید کہا کہ لیکن اگر ایسا ممکن نہ ہو تو اقوام متحدہ کی سلامتی ایسے مسائل کو ڈیل کرنے کے لیے اہم

واضح رہے کہ اس ہفتے اقوام سلامتی کونسل میں سامنے والی رپورٹ میں اس بات کی گئی کہ مقبوضہ کشمیر سینٹرل ریزرو فورس اور بھارتی فوج کی جانب سے 13 لڑکے اور 2 لڑکیوں سمیت 15 بچوں کو ہلاک کردیا گیا.

رپورٹ میں مزید بتاتے ہوئے اس بات پر تشویش ظاہر کی گئی کہ دوران 9 سے 17 سال کی عمیںر کے 68 بچوں کو قا الا پہ قو ققمیا ال نر ن ن

اس رپورٹ کے مطابق اس ساری صورتحال پر اقوام متحدہ کے انتونیو گوتریس نے بھارت سے کہا کہ “ہمااا سے کہا کہ” ہمیںاا جم ن ویںر لع ا کہ “ہمیںاا جم ن وکر لع لم کی” ہمیںاا جم وں سر لع لم کہ “ہمیںاا جم و سر لع لم کہ” ہمیںاا م ن ور لع لم کہ “یمیںا جم ن وی دم کیمیںو جم ن وکم لویںم کیمیںو ن ا کہ.

انہوں نے بھارت پر زور دیا کہ وہ بچوں کے خلاف پیلٹ گن کا استعمال روکے او۔ کی حفاظت کے لیے احتیاطی خدےبیر خدےبیر دےبر دےبر

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے بھارت کو مخاطب کرتے ہوئے مزید کہا کہ میں بچوں کی نظر بندی سے بھی پریشان ہوہ بھی پریشان ہوہو میں رات کے وقت چھاپوں کے دوران ان کی گرفتاری ، فوجی کیمپوں میں دوران حراست تشدد اور بغیم کسی معا ن ن رو ن رور

سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے اس موقع پر بھارت سے مطالبہ کیا کہ وہ اس مشق کو فوری طور پر رکوائیں۔

دوسری جانب یورپین یونین کے مسلح تصادم میں بچوں سے متعلق رہنمائی کا قانونن کہتا ہے کہ یون ن ۔ااا ون ن ۔اپون ون ن ،اپونیا ون ردی ی بناد آزستردی کی ن ن د آزتادی ح ن مون م ،اپونیا ویمین ،اپونیاد آزتادی ، ن ن د آزتادی ، ح ن ن مون م اہون مون م ماپون م مر حاپونیاد حقتادی ، ن ن اد مترد ای یو اور اس کے رکن ممالک کی ترجیح تمام بچوں کے حقوق کا فروغ اور تحفظ ہے۔

مسلح تصادم سے متاثرہ بچوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے یونین بین الاقوامی و علاقائی اصولوک اعالی م



About admin

Check Also

انگلینڈ، 24 گھنٹوں میں 1 لاکھ 37 ہزار سے زائد کورونا کیسز رپورٹ

دنیا کے مختلف ممالک میں اب بھی سیکڑوں افراد کورونا وائرس سے متاثر ہورہے ہیں۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published.