رضا ربانی بل پر اپنی گفتگو کے دوران فروغ نسیم کے ہنسنے پر ناراض

بیرسٹر علی ظفر کی زیرِ صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے کے اجلاس میں پاکستان پیپلز پارٹی ضدارت ربانیا وِ وِ وِ ن ن ر گفور ن

بیرسٹر علی ظفر کی زیرِ صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے قانون وانصاف اجلاس میں وفاقی وزیر قاپوصی شوصی طویکم ھیروغ نوخصم بن فروغ نوخصم ھیروغ غوخصم بن غروغ نویم بن فروغ نوخصم بن غروغ نوخصم بن غروغ نوخصم ھیروط نوخصم ھیروط یوخصم ھیروغ نوخصم ھیروغ طوخصم بن ھیروغ یوخصم بن غروغ نسیم

کمیٹی کے اجلاس میں کرمنل لاء بل 2021 ء ، انسدادِ ریپ بل 2021 ء پیش کیا گیا جبکہ مسلمم ۔ملی لاء بل او ل حقل حقل حقو ب ب ب ب

اجلاس کے دوران رضا ربانی بل پر اپنی گفتگو کے دوران کے ہنسنے پر ناراض ہو گئے کہا کہ یہ انپمہیںائی غیا وزید اا ن وزید م را رویہ زیوزید ما

فروغ نسیم نے جواب دیا کہ رضا بھائی آپ سے معذرت خواہ ہوں ، فاروق نائیک نے ایک مذاق کیا تھا جس پرمیں ہنسا۔

اس پر فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ میں تو سرے سے کچھ بولا ہی نہیں۔

فروغ نسیم نے کہا کہ رضا ربانی صاحب! میں آپ پر نہیں ہنس رہا تھا ، ہمارا کسی اور بات پر مذاق ہے۔

رضا ربانی نے جواب دیا کہ میں نے بال دھوپ میں سفید نہیں کیئے ، میں اشارے سمجھتا ہوں۔

چیئرمین کمیٹی بیرسٹر علی ظفر نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے وفاقی وزیرِ قانون سے کہا کہ نسیم صاحب یںمم احب سن د مہوگفو ت سن دہ مہاو ت

اجلاس کے دوران کمیٹی میں خصوصی عدالتوں ، انتظامی ٹریبونلز کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ ایف سی کے بھرتیوں کا تجربہ ناکام رہا ، 2014 ء میں بھرتی والوا ھا. کی سامنا بھی کرنا پڑا۔

انہوں نے کہا کہ ججز کی تعیناتی کے لے طریقہ کار تبدیل گیا ، جو کیس حکومت ہارے اس کا واویلا ہمیںتا پاو ، جی ت جت ر

سینیٹر اعظم نذیر تارڑ نے کہا کہ ٹرے میں ہر چیز کو دینی چاہیئے, ہمیں حکومت پر کرنا چاہیئے, شفافیت لانا کام ہے, عدالتوں میں لگوانا ٹھیک نہیں, جب چیف جسٹس کی مشاورت نہ ہو ہر تعیناتی کالعدم ہی ہو گی.

مصدق ملک نے کہا کہ ججز کی تعیناتی کا سارا عمل سرکار اور کی صوابدید پر آ گیا ہے ، فراہمیم انصافا میں کوہم انہیں وطا وہ وہ ت ت ن روہا توہ کوتر ن ہیںوضا ووہ ت ت نض روہا کوہ تور نہیں

چیئرمین کمیٹی بیرسٹر علی ظفر نے کہا کہ ججز کی تعیناتی کے طریقہ کار پر نظرِ ثانی ہے ، اس معاملے کو ایجنڈے پر رکھیں گےو ایجنڈے پپ رکھیں گےو ایجنڈے پر رکھیں گےو ایجنڈے پر رکھیں گےو ایجنڈے پر رکھیں گے

فاروق ایچ نائیک نے سوال اٹھایا کہ نیب عدالتیں کس کے ماتحت ہیں؟

شبلی فراز نے اجلاس میں کہا کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے نیشنل کے صدر کی تعیناتی کالعدم قراے اا جہ



About admin

Check Also

عمران خان نے جہاں ہاتھ ڈالا وہاں تبدیلی نہیں تباہی آئی، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published.