گلاب جامن اور رس ملائی

میٹھے پکوان کھانا کس کو پسند نہیں ہوتا .میٹھے پکوان اور میٹھائیاں کا احساس دلاتے ہیں اور خوشیوں کرتے ہیں.شاید ہی کوئی ہو جس کو میٹھا پسند نہ ہو.مٹھائیاں تقریباہر شخص پسند ہوتی ہیں. ہمارے ملک میں شادی بیاہ, سالگرہ, شادی کی سالگرہ, میلاد, عمرہ سے لوٹنے پر غرض ہر خوشی موقع پر میٹھائیاں جاتی تو یوں بھی میں آیا ہے آپس کےگھر جاتے ہوئے بھی بعض اوقات مٹھائی لے کر جاتے ہیں.کئی لوگ میٹھے کہ اتنے شوقین ہوتے ان کو میٹھائی کھانے کے لیے یا تقریب کی ضرورت تی بس جب بھی چاہتا ہے مٹھائی کر یا منگو اکر کھالیتے مٹھائیوں میں سب سے ذیادہ گلاب جامن اور رس ملائی پسندکیے جاتے ہیں.مٹھائی کچھ کھایاہو یا نہیں تقریبا ہر شخص نے گلاب جامن رس ملائی تو ضرور کھائی ہو گی گلاب جامن مختلف طرح کے بھی بنائے جاتے ہیں۔ جن میں دہی والے, دودھ میں ڈوبے ہوئے, شیرے والے, کھوپرا لگے خاص پسند کیے جاتے ہیں.رس ملائی کا منفرد ملائی سے بھرپور ذائقہ کر دیتا ہے.انہیں گھرپر بھی با آسانی بہت سی خواتین گھرپر ہی مختلف طرح کے گلاب جامن اور رس ملائی بنانا پسند خواتین اپنے اہل خانہ کی صحت کے حوالے رہتی ہیں کہ صرف گھر کا بنا صاف ستھرا کھائیں۔ علاوہ ازیں خواتین کی خواہش بھی ہوتی ہے کہ گھر والے ان کے ہاتھوں سے رس بھری مٹھائیوں کا مزہ خواتین روایتی کھانے پکانے ماہر ہیں مگر اب پسندیدہ گلاب گی کےاس کی پیش نذر مختلف گلاب جامن اور رس ملائی کی ریسیپیزتوجہ فرمائیں.

گلاب جامن

اجزاء.

کھویا ۔پانچ سو گرام

میدہ ۔پچاس گرام

بیکنگ پاؤڈر۔ آدھا چائے کا چمچ

انڈا. آدھا انڈا

پانی. دو کپ

چینی. دو کپ

الائچی ۔دو عدد

کھانے کا تیل۔ ڈیڑھ لیٹر

ترکیب.

۔ایک پین میں پانی لیں اوراس میں چینی اور الائچی ڈال کر دس سے پندرہ منٹ تک ہلکی آنچ پر پکا لیں۔

۔اب ایک بول میں کھویا ڈال کر باریک کرلیں اور اس میں میدہ پاؤڈراور انڈا ڈال کر اچھی طرح مکس کر لیں اور گون

۔اب اس کوگول گول شکل کے گلاب جامن بنا لیں۔

۔پھر ایک پین میں کھانے کے تیل کو گرم کرلیںاوراس میں تیار شدہ گلاب جامن ڈال کر لائٹ ہونے تک فرائی کرلیں۔

۔اب گلاب جامن کو تیار شدہ شیرے میں ڈال کر دو سے تین گھنٹے رکھ دیں۔

. مزیدار گلاب جامن سرو کرنے کے لئےتیار ہیں۔

دہی کے گلاب جامن

اجزاء.

میٹھا دہی۔ آدھا کلو

کھویا. آدھا کلو

چینی ۔تین پاؤ

گھی. ڈیڑھ پاؤ

میدہ ۔آدھا پاؤ

کیوڑا. ایک بڑا چمچ

ترکیب.

1۔کھوئے کو خوب پھینٹ کر اس میں میدہ ملا دیں اور دونوں کو یک جان کر لیں پھردہی کپڑے میں باندھ کر لٹکا دیں۔

2۔ پانی نکل جائے تو اسے بھی کیوڑے کے ساتھ کھوئے اور میدے میں ملا دیں۔

3 ۔لیٹر پانی میں چینی ڈال کر دو تار کی چاشنی تیار کر لیں۔

4 ۔کھوئے اور میدے کے ماوے کی گلاب جامن بنا لیں۔

5۔ فرائینگ پین میں گھی گرم کر یں اور گلاب جامنوں کو گہرے سرخی مائل رنگ میں تل کر چاشنی میں ڈالتے رہیں۔

6۔ دو گھنٹے تک شیرے میں ہی پڑا رہنےدیں۔

7۔طشتری میں نکالیں پھر پستے چھڑکیں اور ورق لگائیں۔

دودھ کے گلاب جامن

اجزاء.

میدہ ۔آدھا کپ

بادام ۔آدھا کپ

پنیر ۔آدھا کپ (کاٹیج چیز)

کھانے والا سوڈا ۔آدھا چائے کا چمچ

شکر ۔تین کپ

پانی. دو کپ

دودھ. ایک لیٹر

عرق گلاب۔ ایک چائے کا چمچ

گھی. تلنے کے لئے

1۔بھگوئے ہوئے باداموں کا چھلکا اتار کر پیس لیں اور انہیں میدے کئے ہوئے پنیر میں سوڈا ملا کر ا ڈھکاکد گگن دھ رور رد د رور

2۔اسی دوران ایک برتن میں شکر اور پانی ملا کر شیرہ تیار کرلیں۔

3۔گوندھ کر رکھے ہوئے آمیزے سے گلاب جامن تیار کریں۔

4۔پھر درمیانی حرارت پر گرم کئے ہوئے تیل میں ڈیپ فرائی کرلیں یہاں تک کہ گولڈن براؤن ہوجائیں۔

5۔اب گلاب جامنوں کو شیرے میں ڈالتی جائیں تاکہ مِٹھاس ان میں جذب ہو جائے۔

6۔اب گلاب جامنوں کو شیرے سے نکال کر کسی گہرے پیالے میں احتیاط سے رکھ دیں۔

7۔دودھ کو دھیمی آنچ پر پکا کر اتنا گاڑھا کرلیں کہ وہ پک کر آدھے سے کچھ کم رہ جائے۔

8۔اس میں باقی رہ جانے والا شیرہ شامل کرکے دو سے تین منٹ پکائیں اور عرق گلاب ڈالنے کے بعد ایںس ڈالدھ ڈںل یںامن ڈںل جمن ڈںل ںدور

9۔گرم یا ٹھنڈے جس طرح کھانا چاہیں سرو کر یں۔

رس ملائی

اجزاء.

کارن فلور۔ 1 چائے کاچمچ

دودھ. 2 لیٹر

کاجو. 35 گرام

بادام. 35 گرام

پستہ. 35 گرام

زعفران. 1 چٹکی

کنڈنسڈ ملک۔ half of کپ

پانی. 4th

چینی. 1

لیموں کارس۔ Three چائے کے چمچ

ترکیب

۔ایک پین میں دودھ (ایک لیٹر) لے کر اُبال لیں۔

۔اب اس میں لیموں کا رس ڈال کر دودھ کی پھُٹکڑیاں بنا لیں۔

۔اب اس دودھ کو ایک ململ کے کپڑے میں ڈال کر چھا ن لیں اور ہلکا سا نچوڑ فالتو پانی نکال لیں۔

۔اب نچوڑی ہوئی پوٹلی کو دوبارہ تیس منٹ تک لٹکا لیں تاکہ مزید پانی نکل جائے۔

۔اب پھٹے ہوئے دودھ کو ایک برتن میں ڈال کر اس میں کا رن فلور ڈال دیں ہلکا سا ملائم کر لیں اور اس کے پیڑے بنا لیں پیڑے بنا

۔پھر ایک پین میں پانی اور چینی لے کر اچھی طرح ہلا کر مکس کرلیں۔

۔پھر چولھے کی آنچ کو تیز کر یں اور اس میں تیار کیے ہوئے پیڑے ڈال دیں۔

۔اس کے بعد ڈھکن بند کر لیں اور اٹھارہ منٹ تک پکا کر نکال لیں۔

۔اب تیار شدہ پیڑوں کو ایک برتن میں ڈال کر تیار شدہ شیرے میں ڈپ کریں اور ٹھنڈا کرلیں۔

۔پھر ایک پین میں دودھ (تین کپ) لیں اوراس میں کنڈنسڈ ملک ، پستہ اور ڈال کر بارہ سے پندرا مڑھنٹاااا ادرہ مڑھنٹااا اد تا (ادرہ) منڑھااا پکا رد ترد

۔اب ایک برتن میں پیڑے لیں اور اس پر تیار کی ہوئی دودھ ملائی ڈال دیں۔

. مزیدار رس ملائی سرو کرنے کے لیے تیار ہے۔



About admin

Check Also

ماہِ صیام کی الوداعی اتوار اور افطار دستر خوان

اللہ کے پیارے بندے رحمتوں ، برکتوں کا خوان سمیٹتے ہوئے ، اب ماہِ صیام …

Leave a Reply

Your email address will not be published.