وزیراعلیٰ بزدار کیلئے بڑا چیلنج

جمہوری معاشرے میں ریاست کی خوشحالی مراد نہیں کہ وقت کے پاس مال و دولت ریاست کی عوام چاہے بسی کی ہمارے ہاں تو ایک بےروزگاری آہ ستائے بکا جبکہ دوسری طرف حکومت وقت رونا ہوتا تک خوشحال اور مستحکم نہیں ہو عوام کی خوشحالی, اور بےروزگاری تو درکنار قیامت خیز مہنگائی بیروزگاری کے ہاتھوں عوام زندہ درگور ہیں اس حالات میں کرونا وائاس نے جلتی پکیا یا م ا م

کرونا کے باعث روزگار کے مواقع ہونے ہو چکے ہیں بزدار حکومت نے تر کوششوں کے باوجود کو کنٹرول کرنے میں نظر آ رہی ہے رمضان المبارک میں پنجاب میں 314 خوردونوش کو کنٹرول پرائس پر فروخت یقینی لیے لگائے ہیں بزدار حکومت کا تقریبا ڈھائی عرصہ گزر چکا ہے خالی بجائے عملی عوام کو اگر عملی تو پی.ٹی.آئی اپنی اکثریت پنجاب میں کھو سکتی ہے وزیراعظم عمران خان کے ویژن پر زیادہ زیادہ کام کرنے کی ضرورت اب ضروری ہے کے خلاف اور بیروزگاری کے خاتمے پر دھیان دینا چاہیے.

عوام سے کئے گئے وعدوں میں وزیراعظم نیا پاکستان پی۔ٹی۔آئی کی حکومت کے کچھ پورے کرتا نظر آ جس میں لر یاوا وزیر یاوا ہیںزیر یاوا یزیر یاوا یور میاںا ییکاوا زیوزیر میاںا او کےوزیر میاںا اوا یوزیر میاںا اوا کےوزیر میاںا مم در تر ع ع بزدار حکومت کی وزارت ہائوسنگ کیلئے کوئی طرف سے ہے کہ اس وقت ہائوسنگ ڈیپارٹمنٹ افسران بہت ایماندار اور شہرت میں سیکرٹری صلاحیتوں مثبت آنے کے پر متزلزل ہوئے بغیر بیماری میں بھی اس ہی جوش تن دہی سے لگے رہے یہ نصر اللہ کی محنت ہی ثمر ہے کہ پنجاب شہروں میں نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبہ تیزی سے گامزن

پیروزگاری ، مہنگائی: وزیراعلیٰ بزدار کیلئے بڑا چیلنج

یہ وزیراعلی سردار عثمان بزدار, وزیر ہاؤسنگ میاں محمودالرشید سیکریٹری پنجاب جواد رفیق ملک کے ہی کی بدولت ہے کہ منصوبے میں وہ جان اپنی خدمات ہیں, یہاں یہ بتانا ضروری ہائوسنگ منصوبہ کیلئے چیف سیکریٹری پنجاب جواد رفیق ملک براہ راست سیکریٹری ہائوسنگ ظفر نصراللہ کی راہنمائی کرتے ہوئے تمام تر بیوروکریٹک مسائل کو سپیڈی حل کروا رہے ہیں۔

ویسے یہ ایک خوش آئند امر کہ پاکستان وجہ سے کنسٹرکشن سیکٹر میں صوبے بھر میں سیکٹر میں بھی متوقع. تک ہوسکتی ہے۔

نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے میں لاہور اتھارٹی کام ، جس کے ڈائریکٹر جنرل احمد سے ہٹ کر گئے ہدفِ نیا ڈی. سکیم اے سٹی اپارٹمنٹس کا منصوبہ ہے ، جیسے ایل ڈی اے سٹی کیا گیا ہے جس کے شفاف طظریقے ٹیاخار چکےم ا ممااا م کا عمااا مکم تر مم ا بت

35 ہزار اپارٹمنٹس کے منصوبے کے پہلے مرحلے میں four ہزار فلیٹس بنائے جا رہے ہیں جن کی درخوااستوں کی وصولیای وووٹع کی وصولی بعہد کمپیود تاہم ڈی جی ایل ڈی اے احمد عزیز تارڑ کو اپنے شعبہ انجینئرنگ سے مزید اچھے حاصل کرنے کے لئے کچھ اصلاحات کرن ن

دوسرا اس حقیقت سے بھی انکار نہیں کہ بے پیچیدگیوںکے باوجود ایل ڈی اے سٹی ہاؤسنگ اپارٹمنٹس منصوبے کو کروانے ایم عمران جنہوں کاروباری مصروفیات کو وزیراعظم عمران خان کے منصوبہ کو مکمل کروانے کی ٹھان رکھی ہے.

پاکستان میں پہلی مرتبہ حکومت کا پیسہ خرچ کروائے بغیر موڈگیج پالیسی کے کم آمدنی والے لوگوں کو گھاوا وائس چیئرمین ایل ڈی اے ایس عمران اور جی احمد تارڑ کی کوششوں کی بدولت یورپ اور کی طرز پر کوئی بھی والا بے گھر پالیسی کے تحت 5 سال سے 20 سال پر محیط آسان اقساط پر اپنے گھر کا مالک بن.

اس منصوبے کی خوبصورتی یہ ہے کہ اپارٹمنٹ کی چابی ملنے کے بعد ماہانہ آسان اقساط کا آغاز ہوگا۔ ایس ایم عمران نے وزیراعظم عمران خان کے ویژن کے تحت ایل ڈی اے میں ایسی اصلاحات ہیں کہ جس سیزیے کاجد ن سیکٹوت م امید ہے کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے ایل ڈی اے سٹی اپارٹمنٹس منصوبے کی تکمیل سے پی آئی لاہور میں پوزیشن حکون میں وزیشن



About admin

Check Also

کیا مشکل معاشی فیصلوں کا نقصان ’’ن لیگ‘‘ کو ہوگا؟

اس حقیقت کے باوجود کہ اپوزیشن کی جانب سے بڑے بڑے عوامی اجتماعات ٗ جلسے …

Leave a Reply

Your email address will not be published.