اچار کے صحت پر حیرت انگیز فوائد


قدیم زمانے سے پاکستان, ایشیائی اور یورپی ممالک میں بھی سرکے سمیت دیگر اجزا میں بنی غذاؤں استعمال کیا ہے, خوصا اور بنگلہ بڑا اہتمام کیا جاتا جسے عام اصطلاح میں اچار کہتے ہیں.

طبی و غذائی ماہرین کی جانب اچار فوائد یہ ایک ایسی قدیم روایت جو دیکھنے کو ملتی مگر آج ڈالتی ہیں اور یہ اچار کے افراد سمیت ہر آنے والے مہمان کے سامنے بھی پیش کیا جاتا ہے.

اچار ڈالنا پاکستان کی روایتوں میں سے ایک خاص اچار کا استعمال خصوصی طور پر سندھ, اندرون پنجاب اور متعدد میں بھی کیا جاتا کے شہر اچار پاکستان بھر میں کیا جاتا ہے, یہ مکس مسالوں کا اچار نہایت لذیذ اور صحت کے لیے مفید ہوتا ہے.

اچار جہاں گھروں میں خواتین بناتی وہیں برانڈز کہ طرح طرح کے اچار بناتے انہیں بڑی تعداد خریدا جاتا بے شمار طبی فوائد سے کم لوگ واقف ہیں جنہیں جاننا اور اس کا استعمال بڑھانا لازمی ہے.

اچار کے استعمال سے صحت پر آنے والے چند مثبت اثرات مندرجہ ذیل ہیں:

طبی و غذائی ماہرین کے مطابق اچار میں استعمال کیے جانے والے ہی قدرتی اجزا مثلا سرکہ, لال سرسوں کا تیل, رائی میتھی دانہ, ہلدی, کلونجی, نمک, کیری, لیموں, گاجر, ہری مرچ, لسوڑے اور دیگر متعدد اجزا صحت کے لیے نہایت مفید ہوتے سب میں اینٹی آکسیڈنٹ اینٹی انفلامینٹری خصوصیات ، انفیکشن سے بچاؤ کے لیے اجزا بھی شامل ہوتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ مختلف اقسام کی چٹنیوں ، مسالوں ، فرمینٹڈ فوڈ کو حالیہ تحقیق میں صحت لیے مفیاد قرار دیا گیا اچار میں موجود قدرتی صحت بخش اجزا کینسر سے بچاؤ کا بھی سبب بنتے ہیں۔

غذائی ماہرین کے مطابق ہر قسم کے اچار کھانے سے جسم کو اور منرلز حاصل ہوتے ہیں جو کہ جسم کو چاقد و چنوند ر

اچار میں استعمال ہونے والے اجزا خاص طور پر میتھی دانہ ، ک لونجی ، جہاں اچار کے ذائقے کو بڑھا الق اد د تن قت

اچار کے کھانے سے جسم کا مدافعتی نظام طاقتور ہوتا ہے اور انیمیا (خون کی کمی) اور ۔بینائی کی کمزوری تدور ہ کمزوری تدور ہ

اچار میں وٹامن سی اور اے علاوہ اور بہت سے وٹامنز جو متعدد بیماریوں سے جسم کھ اٹوپ ہیں

اچار میں سرکہ استعمال ہوتا ہے اور سرکہ ایسیڈک ایسڈ سے بھر پور ہوتا ہے جو جسم میں ہیموگلوبن کاو بڑھات ہے۔

اچار میں شامل سبز مرچ اور لہسن شوگر لیول کو کرنے میں انتہائی مفید ہے ، لہہفین جھیسم مضر صحت ۔۔اوں مضر صحت مییوں مضر صحت مکیوں مر صحت مکادوں مو مر کت مکادوں سر سبات مردوں سر سبر ارد مر ب مکردوں مکول سم برد

امریکی تحقیق کے مطابق اچار کا مسلز کے مسئلے روک تھام میں عام پانی کے زیادہ فائدہ مند ثابت ہے, یہ کی اکڑن کی تکلیف میں سے ریلیف دیتا ہے, ورزش کرنے والے افراد لیے اچار کھانا ناگزیر ہے.

اچار کے عرق میں موجود پرو بائیوٹکس معدے میں موجود صحت کے لیے مند بیکٹریا کی نشوونما اور صحت منےہیںد دوازن صحت مندد توازن میں مند د توازن ہیںرت د رد

ایک طبی تحقیق کے مطابق اچار کا استعمال جسمانی وزن میں کمی میں مدد دیتا ہے جس کی وجہ اس میں موجود سرکہ ہے۔

ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ اچار کے میں موجود اجوائن نا صرف بدہضمی ، پیٹ میں اکور ہاضمے ھی م م ا امے کے م م ر لوت یہم رد ک بات کم رد ک بات ر بات کم رد ک بات کم رد ت بات رم رد ک بات کر بات

اچار کے استعمال سے صحت پر آنے والے نقصانات:

مارکیٹ میں دستیاب ریڈی میڈ اچار میں ‘پریزرویٹیوز’ استعمال کیے جاتے ہیں جو صحت پر منفی اثرات مرتب کرتے ہیں۔

بازار میں دستیاب اچاروں کے ذائقے کو بڑھانے کے لیے میں تیل ، سرکہ اور نمک استعمال کیا ہے اوور کپاااا ہے ا و کن اوں ککے تستر توصح تو توصح تر تر

ڈبہ پیک مارکیٹ میں دستیاب اچاروں میں خاص طور پر آم کے لیموں کے اچار میں شوگر اہسہےال ل جو ج ذیں

مارکیٹ سے ملنے والے اچار خاص طور پر کُھلے اچار خدشہ ہوتا ہے کہ اچار کو صاف کےکریقے گیا ہے یا نہیں ،اا ہے ا نہیں ، ا ا نہیں چ ا




Supply hyperlink

About admin

Check Also

عالمی ادارہ صحت نے منکی پاکس بیماری کا نیا نام ’ایم پوکس‘ تجویز کر دیا

عالمی ادارہ صحت نے منکی پوکس بیماری کا نیا نام ’ایم پاکس‘ تجویز کر دیا۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *